عشق مصطفی

ادائے عاشقان حق ادا کرنے کے دن آئے
ناموس مصطفی پر جاں فدا کرنے کے دن آئے

جو بھونکے مصطفی جیسی مقدس پاک ہستی کو
لعین ایسے کا تن سے سر جدا کرنے کے دن آئے
ناموس مصطفی پر جان فدا کرنے کے دن آئے

مصلہ بیچ کر خنجر خرید ائے صوفی دوراں
قلب کفر پہ ماتم بپا کرنے کے دن آئے

جو ہیں مصروف تسبیحات و چلہ ان سے کہتا ہوں
دعائیں ہو چکی حضرت دوا کرنے کے دن آئے

شہید عشق ~ارشد غازی علم الدین کے جانے سے
جو پیدا ہو چکا پُر خلاء کرنے کے دن آئے

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s